کانگریس کی ’لڑکی ہوں، لڑ سکتی ہوں‘ پوسٹر گرل پرینکا موریہ بی جے پی میں شامل

Reading Time: 2 minutes

بی جے پی سے ارکان اسمبلی کے انخلا کے بعد اب سماج وادی پارٹی سے لیڈروں کی بھگوا پارٹی میں شمولیت کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ سماج وادی پارٹی کے سابق MLA پرمود گپتا، جو پارٹی کے سرپرست ملائم سنگھ یادو کے رشتہ دار ہیں، لکھنو میں آج بی جے پی میں شامل ہوگئے۔ پرمود گپتا، ملائم سنگھ یادو کی دوسری بیوی سادھنا گپتا کے رشتہ دار ہیں۔

ایک دن قبل، ملائم سنگھ یادو کی بہو اپرنا یادو نے بی جے پی کی رکنیت حاصل کی تھی۔ پرمود گپتا سال 2012 میں اوریا کے بڈھونا حلقہ سے سماج وادی پارٹی کی سیٹ پر ایم ایل اے منتخب ہوئے تھے۔

دوسری جانب، اترپردیش میں کانگریس کے ‘ لڑکی ہوں لڑ سکتی ہوں’ پوسٹر میں نمایاں طور پر نظر آنے والی ڈاکٹر پریانکا موریہ اورایودھیا کی لوک گلوکارہ وندنا مشرا بھی بی جے پی میں شامل ہوگئے ہیں۔ پریانکا موریہ ریاست میں کانگریس کا چہرہ تھیں۔ ریاستی بی جے پی کے صدر اور بی جے پی میں شمولیت کی کمیٹی کے صدر ڈاکٹر لکشمی کانت باجپائی نے ان تمام لیڈروں کو کھنڈا پہنا کر پارٹی میں شامل کیا۔

پرینکا موریہ نے الزام عائد کیا کہ لڑکی ہوں لڑ سکتی ہوں پر کانگریس کا ٹکٹ نہیں پاسکی۔ انہوں نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ [کانگریس] نے اس مہم کے لئے میرا چہرہ، میرا نام اور میرے 10 لاکھ سوشل میڈیا فالوورز کا استعمال کیا۔ لیکن جب انتخابات کے ٹکٹ کی بات آئی تو مجھے نظر انداز کردیا گیا۔ یہ ناانصافی ہے۔ یہ سب پہلے سے طے شدہ ہے. اترپردیش میں مہیلا کانگریس کی نائب صدر پریانکا موریہ نے کہا کہ مجھے ٹکٹ اس لئے نہیں ملا کیونکہ میں او بی سی [دیگر پسماندہ طبقات] کی لڑکی ہوں اور پریانکا گاندھی کے سکریٹری سندیپ سنگھ کو رشوت نہیں دے سکی۔