تلنگانہ سکریٹریٹ میں تعمیر ہونے والی دو مساجد کے لیے سنگ بنیاد تقریب کو قطعیت،مفتی خلیل احمد نے کی تصدیق

Reading Time: 2 minutes

کے سی آر حکومت نے تلنگانہ سکریٹریٹ میں تعمیر ہونے والی دو مساجد کے لیے سنگ بنیاد تقریب کو قطعیت دے دی ہے۔ دونوں مساجد کی تعمیر کے لیے سنگ بنیاد کل یعنی 25 نومبرجمعر ات کو رکھا جائے گا ۔ توقع ظاہر کی جارہی ہے کہ مولانا مفتی خلیل احمد شیخ الجامعہ جامعہ نظامیہ ان مساجد کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ تلنگانہ وزیرداخلہ محمد محمود علی سمیت تلنگانہ اسٹیٹ وقف بورڈ کے چیئرمین محمد سلیم نے سکریٹریٹ کے احاطہ میں پہنچ کر مساجد کے لیے مختص کی گئی زمین کا مشاہدہ کیاہے۔

نئے سکریٹریٹ کی تعمیر کے لئے قدیم عمارتوں کے انہدام کے دوران سکریٹریٹ کے احاطہ میں موجود دونوں مساجد اور مندر کوسال 2020میں 7 اور 8 جولائی کی درمیانی شب منہدم کیا گیا تھا۔ چیف منسٹر نے اسی مقام پر دوبارہ تعمیر کا وعدہ کیا اور پہلی مرتبہ سال2020 میں نومبر کے دوسرے ہفتہ میں سنگ بنیاد رکھنے کا تیقن دیا تھا بعد میں 27 جنوری کو ریاستی وزراء کے ایشور ، سرینواس یادو اور محمود علی نے مسلم نمائندوں سے مشاورت کے بعد 12 فروری 2021 ء کو سنگ بنیاد کی تاریخ طئے کی تھی ۔کورونا وباء اور لاک ڈاؤن کے سبب یہ تاریخ بھی سنگ بنیاد کے بغیر گزر گئی ۔

تلنگانہ سکریٹریٹ کے احاطہ میں موجود دونوں مساجد کے انہدام کے بعد مسلمانوں میں تلنگانہ حکومت بالخصوص تلنگانہ راشٹریہ سمیتی کے رویہ کو لیکر ناراضگی پھیل گئی تھی ۔ ملی تنظیموں کی جانب سے کئی مرتبہ احتجاج کے بعد بل آخر وزیراعلیٰ کے چندراشیکھرراؤ نے سکریٹریٹ کے احاطہ میں اسی مقام پر دونوں مساجد کی تعمیر کا اعلان کیا تھا۔تاہم تلنگانہ حکومت نے مساجد کے لیے سنگ بنیاد تقریب کو بھی بار بار ملتوی کرتے ہوئے مسلمانوں کو مایوس کیا لیکن آخر کار سکریٹریٹ میں دونوں مساجد کی تعمیر کے لیے سنگ بنیاد رکھنے کا اعلان کیا گیاہے