بزدل ’ہندوتووادیوں‘ پر سوشل میڈیا پر نفرت کے بیج بونے کا راہول گاندھی کا الزام

Reading Time: < 1 minute

کانگریس لیڈر راہول گاندھی نے آئے دن سوشل میڈیا پر مخصوص طبقے سے متعلق کئے جارہے ’ناخوشگوار تبصروں‘ کا جواب دیتے ہوئے الزام لگایا کہ ہندوتوا کے نظریے کو عام کرنے والے سائبر دنیا میں نفرت پھیلا رہے ہیں۔کانگریس لیڈر نے سوشل میڈیا پر ہر لمحہ سماج میں نفرت کے بیچ بونے والوں کو بزدل قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان میں کھل کر سامنے آنے کی ہمت نہیں ہے۔ انہوں نے کانگریس کے حامیوں سے اپیل کی کہ وہ ’نفرت‘ کا مقابلہ کریں۔

راہول گاندھی نے ہندی میں ایک ٹوئیٹ کرتے ہوئے کہا کہ ’’ہندوتووادی‘‘ سائبر دنیا میں نفرت پھیلا رہے ہیں کیونکہ صرف بزدل ہی چھپ کر حملہ کرتے ہیں۔ ہمت ہوتی تو سامنے آتے۔ اس نفرت کا ڈٹ کر مقابلہ کرتے رہنا ہوگا۔ دیش بچانا ہے! #NoFear۔

کانگریس کے سابق صدر نے بی جے پی پر ’ہندوتوا‘ پھیلانے کا الزام لگایا ہے اور کہا ہے کہ ہندو اور’ہندوتوا وادی‘ میں فرق ہوتا ہے۔ خیال رہے کہ کانگریس لیڈر راہول گاندھی نے چند سال قبل ہندوتوا کے نظریہ ساز ویر ساورکر کو بزدل قرار دیا تھا جس کے بعد پونا شہر میں انکے خلاف شکایت درج کرائی گئی تھی۔ کانگریس لیڈر نے نئی دہلی میں ایک ریلی میں یہ تبصرہ کیا تھا۔ پولیس تھانے میں درج شکایت کے مطابق راہول گاندھی نے نئی دہلی میں اپنی تقریر میں ساورکر کو بزدل قرار دیا تھا اور ان کے خلاف غلط بیانی اور ہتک آمیز جملے استعمال کیے تھے۔