Electric Highway in India:دہلی اور جئے پور کے بیچ بنے گا انڈیا کا پہلا الیکٹرک ہائی وے

Reading Time: 2 minutes

الیکٹرک ہائی وے کیا ہے؟

ہم سبھی نے دیکھا ہوگا کہ کس طرح الیکٹریک ٹرین پٹری پر بنے اوور ہیڈ پاور لائنس سے حاصل بجلی سے چلتی ہے۔ الیکٹرک ہائی وے اسی نوعیت کاہوگا۔ سڑک پر گاڑی چل رہی ہوگی اور ساتھ ہی اس الیکٹریک گاڑی کی چارجنگ بھی جاری رہیگی۔ الیکٹرک ہائی وے پر چلاءے جانے والے ٹرک برقی موصول کرنے والی سلاخوں کو اوور ہیڈ پاور لائنس سے جوڑ دیں گے جس کی بنا کر ٹرک کی الیکٹرک بیاٹری چارج ہونی شروع ہو جائیگی۔ قابل ذکر ہیکہ سڑک پر چارجنگ کے دوران، گاڑیاں متعین کی گئی رفتار اور لین ہی چلائی جاسکیں گی۔

الیکٹرک گاڑیاں ہی مستقبل کا ٹرانسپورٹ ہے۔

مودی حکومت کی کوشش ہیکہ لوگ الیکٹرک گاڑیاں استعمال کرنا شروع کردیں۔ 2019 کے عام بجٹ میں مرکزی وزیر مالیہ نرملا سیتا رامن نے لون پر الیکٹرک وہیکل خریدنے والوں کو ڈیڑھ لاکھ روپئے تک انکم ٹیکس میں راحت دینے کا اعلان کیا تھا۔ اسکے علاوہ مرکز نے الیکٹرک گاڑیوں پر جی ایس ٹی کے نرخوں کو 12 سے 5 فیصد تک گھٹادیا ہے۔

کیا دنیا کے دوسرے ممالک میں بھی الیکٹرک ہائی وے موجود ہے؟

سویڈن اور جرمنی میں الیکٹرک سڑکیں زیر استعمال ہیں۔ 2018 میں سویٖڈن نے دنیا کی پہلی الیکٹرک سڑک بنائی تھی جو اس پر چلنے والے گاڑیوں کی بیاٹریوں کو حرکت کے دوران چارج کرتی رہتی ہے۔ 2019 میں جرمنی نے بھی ملک کی پہلی الیکٹرک ہائی وے متعارف کرائی۔ امریکہ اور برطانیہ میں بھی الیکٹرک سڑکوں کی تعمیر کی رپورٹس ہیں۔ گلوبل وارمنگ اور موسمیاتی تبدیلی کے پیش نظر دنیا بھر کی حکومتیں گاڑیوں سے نکلنے والے کاربن ڈائی آکسائیڈ میں قابل لحاظ کمی لا نھے کیلئے کلین انرجی کو اپنا رہے ہیں۔