تریپورہ میں میونسپل الیکشن کے لیے رائے دہی۔ سکیورٹی کے سخت انتظامات

Reading Time: 2 minutes

تریپورہ میں میونسپل الیکشن کے لیے ووٹنگ جاری ہے۔ بلدیہ کی 200 سیٹوں کے لیے ووٹ ڈالے جارہے ہیں۔ میونسپل الیکشن کے لیے ریاست بھر میں جملہ 770 پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ اس دوران عوام انتخابی مراکز پر پہنچ کر اپنا حق رائے دہی کا اختیار استعمال کررہی ہے۔ اس سے قبل عدالت عظمیٰ نے تریپورہ کے ڈی جی پی اور داخلہ سیکرٹری کوہدایت دی تھی کہ شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کو یقینی بنانے کے لیے تمام پولنگ بوتھوں پر حفاظتی دستوں کا بھرپور انتظام کریں۔ عدالت نے آل انڈیا ترنمول کانگریس کی درخواست کو مسترد کردیا کیوں کہ پارٹی نے تریپورہ میں بگڑتے لا اینڈ آرڈر کے پس منظر میں انتخابات کو ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی۔

تریپورہ میں ہونے والے میونسپل انتخابات ( Municipal polls ) کے لیے نیم فوجی دستوں کے دو اضافی کمپنیوں کو فوری طور پرتعینات کرنے کے لیے سپریم کورٹ نے مرکز کو ہدایت دی ہے۔ عدالت عظمیٰ نے اس بات پر زور دیا کہ ہر پولنگ بوتھ پر نیم فوجی فورسس تعینات کئے جائیں تاکہ شفاف اور غیرجانبدارانہ انتخابات کو یقینی بنایا جاسکے۔

جسٹسس ڈی وائی چندراچوڈ، سوریہ کانت اور وکرم ناتھ پر مشتمل عدالتی بنچ نے کہا کہ پولنگ بوتھوں پر CCTV کیمروں نہ ہونے کی وجہ سے ضروری ہیکہ پرنٹ اور الیکٹرانیک میڈیا کو میونسپل الیکشن کی رپورٹنگ کے لیے مکمل رسائی دی جائے۔

تریپورہ حکومت کی جانب سے پیروی کرنے والے سینیئر ایڈوکیٹ مہیش جیٹھ ملانی نے عدالت کو بتایا کہ ڈائریکٹر جنرل آف پولیس اور داخلہ سیکٹری کی ہدایت پر 78 سیکشنس کے علاوہ 15 اضافی سیکشنس کو تعینات کیا گیا ہے۔ عدالت کو یہ بھی اطلاع دی گئی کہ مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے BSF کی دو کمپنیاں بھی تعینات کی گئی ہیں۔

عدالت عظمیٰ نے تریپورہ کے DGP اور داخلہ سیکرٹری کوہدایت دی کہ شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کو یقینی بنانے کے لیے تمام پولنگ بوتھوں پر حفاظتی دستوں کا بھرپور انتظام کریں۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ ڈی جی پی اور داخلہ سیکرٹری ریاست میں سکیورٹی صورتحال کا جائزہ لیں گے اور ضرورت پڑنے پر مزید حفاظتی دستوں کو تعینات کریں گے۔

عدالت عظمیٰ نے 23نومبر کو کہا تھا کہ جمہوریت میں الیکشن کو ملتوی کرنا ایک انتہائی اقدام ہے کیوں کہ ایسا کرنے سے غلط رجحان کی شروعات ہوگی۔ عدالت نے آل انڈیا ترنمول کانگریس کی درخواست کو مسترد کردیا کیوں کہ پارٹی نے تریپورہ میں بگڑتے لا اینڈ آرڈر کے پس منظر میں انتخابات کو ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی۔ تاہم، عدالت نے DGP اور داخلہ سیکرٹری کو ہدایت دی کہ وہ میونسپل الیکشن کے پرامن انعقاد کے لیے ضروری اقدامات کرے۔