پٹرول ، ڈیزل اور ٹماٹر کے بعد اب صابن بھی مہنگے، ایف ایم سی جی کمپنیوں نے کیا اعلان

Reading Time: 2 minutes

Soap and Detergent Prices: اب آپ کے لیے صابن اورکپڑے دھونے کا پاؤڈر Detergentمہنگا ہو گیا ہے۔ HUL اور ITC نے صابن اور کپڑے دھونے کے لئے استعمال میں آنے والے پوڈر اور صابن کی قیمتوں میں بھی اضافے کا اعلان کیا ہے۔ وہیل ڈٹرجنٹ پاؤڈر، رین بار اور لکس صابن کی قیمتیں 3.4 فیصد سے بڑھا کر 21.7 فیصد کر دی گئی ہیں۔ اسی وقت، ITC نے فیاما صابن کی قیمت میں 10 فیصد، ویول کی قیمت میں 9 فیصد اور Engage deodorant کی قیمت میں 7.6 فیصد اضافہ کیا ہے۔ سی این بی سی ٹی وی 18 کی رپورٹ میں یہ جانکاری دی گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق ملک کی دو بڑی فاسٹ موونگ کنزیومر گڈز (ایف ایم سی جی) کمپنیوں نے قیمتوں میں اضافے کی وجہ انکے اخراجات میں اضافے ۔HUL نے وہیل ڈٹرجنٹ کے 1 کلوگرام پیک کی قیمت میں 3.4 فیصد اضافہ کیا ہے۔ اس سے یہ 2 روپے مہنگا ہو جائے گا۔ کمپنی نے وہیل پاؤڈر کے 500 گرام پیک کی قیمتوں میں دو روپے کا اضافہ کر دیا ہے۔ اس کی قیمت 28 روپے سے بڑھ کر اب 30 روپے ہو گئی ہے۔

لکس صابن 25 روپے مہنگا

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایچ یو ایل نے رن بار کے 250 گرام پیک کی قیمت میں 5.8 فیصد اضافہ کیا ہے۔ FMCG دیو نے لکس صابن کے 100 گرام ملٹی پیک کی قیمت میں 21.7 فیصد یا 25 روپے کا اضافہ کیا ہے۔ دوسری طرف، آئی ٹی سی نے فیاما صابن کے 100 گرام پیک کی قیمتوں میں 10 فیصد اضافہ کیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی کمپنی نے Vivel صابن کے 100 گرام پیک کی قیمت میں نو فیصد اضافہ کیا ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ کمپنی نے Engage deodorant کی 150ml کی بوتل کی قیمت میں 7.6 فیصد اور Engage پرفیوم کی 120ml کی بوتل کی قیمت میں 7.1 فیصد اضافہ کیا ہے۔

آئی ٹی سی کے ترجمان نے CNBC TV18 کو بتایا کہ اخراجات میں اضافہ کے باعث کی قیمتوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے اور صنعت نے قیمتوں میں اضافہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسی کے پیش نظر کمپنی نے منتخب اشیاء کی قیمتوں میں تبدیلی کی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ اس فیصلے کا مقصد اس بات کو یقینی بنانا تھا کہ وہ قیمتوں کا سارا دباؤ صارفین پر نہ ڈالیں۔آپ کو بتاتے چلیں کہ دوسری سہ ماہی میں ہندوستان یونی لیور کے خالص منافع میں سالانہ بنیادوں پر 9 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ کمپنی کا منافع 2,187 کروڑ روپے تک پہنچ گیا ہے، جو توقع سے تھوڑا کم رہا ہے۔